Wednesday, April 30, 2014

تمام عمر کہاں کوئي ساتھ ديتا ہے


کٹھن ہے راہ گزر تھوڑي دور ساتھ چلو
بہت کڑا ہے سفر تھوڑي دور ساتھ چلو

تمام عمر کہاں کوئي ساتھ ديتا ہے
يہ جانتا ہوں مگر تھوڑي دور ساتھ چلو

نشے ميں چور ہوں ميں بھي تمہيں ہوش نہيں
بڑا مزہ ہو اگر تھوڑي دور ساتھ چلو

يہ ايک شب کي ملاقات بھي غنيمت ہے
کسے ہےکل کي خبر تھوڑي دور ساتھ چلو

ابھي تو جاگ رہے ہيں چراغ راہوں کے
ابھي ہے دور سحر تھوڑي دور ساتھ چلو

طواف منزل جاناں ہميں بھي کرنا ہے
فراز تم بھي اگر تھوڑي دور ساتھ چلو


احمد فراز

یا میرا دل پتھر کر دے یا اللہ


درد سے میرا دامن بھر دے یا اللہ
پھر چاہے دیوانہ کر دے یا اللہ

میں نے تجھ سے چاند ستارے کب مانگے
روشن دل بیدار نظر دے یا اللہ

سورج سی اک چیز تو ہم سب دیکھ چکے
سچ مچ کی اب کوی سحر دے یا اللہ

یا دھرتی کے زخموں پر مرہم رکھ دے
یا میرا دل پتھر کر دے یا اللہ

قتیل شفائی

Tuesday, April 22, 2014

SQL select row where id=max(id)

How to get MEX id of your table Primary Key.
The MAX() function returns the largest value of the selected column.

SQL MAX() Syntax

SELECT MAX(column_name) FROM table_name;

SELECT * FROM  tablename WHERE    id = (SELECT MAX(id ) FROM tablename

Demo Database

In this tutorial we will use the well-known Northwind sample database.
Below is a selection from the "Products" table:
ProductID ProductName SupplierID CategoryID Unit Price
1 Chais 1 1 10 boxes x 20 bags 18
2 Chang 1 1 24 - 12 oz bottles 19
3 Aniseed Syrup 1 2 12 - 550 ml bottles 10
4 Chef Anton's Cajun Seasoning 2 2 48 - 6 oz jars 21.35
5 Chef Anton's Gumbo Mix 2 2 36 boxes 25


SQL MAX() Example

The following SQL statement gets the largest value of the "Price" column from the "Products" table:

Example

SELECT MAX(ProductID) AS maxProductID FROM Products;

Monday, April 21, 2014

Search for an Item in a ListBox Control

In this example, you add some items to a Windows Forms ListBox control when the form is loaded. Then you search the ListBox for a specific item by clicking a button on the form. If the item is found, it is selected and a success message, which contains the item and its index, is sent by using a message box. Otherwise, an "Item not found" message is sent.



Example 01:

 private void Form1_Load(object sender, System.EventArgs e)
{
    listBox1.Items.Add("Angelina");
    listBox1.Items.Add("Isabella");
    listBox1.Items.Add("Sarah");
}

private void button1_Click(object sender, System.EventArgs e)
{
    // Set the search string:
    string myString = "Isabella";
    // Search starting from index -1:
    int index = listBox1.FindString(myString, -1);
    if (index != -1)
    {
        // Select the found item:
        listBox1.SetSelected(index,true);
        // Send a success message:
        MessageBox.Show("Found the item \"" + myString +
            "\" at index: " + index);
    }
    else
        MessageBox.Show("Item not found.");
}

ListBox Control with an Array of Strings


This example adds an array of strings to a ListBox control when the Windows Form opens.

Example  01:

private void Form1_Load(object sender, System.EventArgs e)
{
    string [] myList = new string[4];

    myList[0] = "One";
    myList[1] = "Two";
    myList[2] = "Three";
    myList[3] = "Four";

    listBox1.Items.AddRange(myList);
}

C# How to: Add and Clear Items in a ListBox Control


This example adds the contents of a Windows Forms TextBox control to a ListBox control when you click button1, and clears the contents when you click button2.

Example 1:

private void button1_Click(object sender, System.EventArgs e)
{
    listBox1.Items.Add("Sally");
    listBox1.Items.Add("Craig");
}

private void button2_Click(object sender, System.EventArgs e)
{
    listBox1.Items.Clear();
}

Thursday, April 17, 2014

میں ڈھونڈنے کو زمانے میں جب وفا نکلا

میں ڈھونڈنے کو زمانے میں جب  وفا نکلا
پتا چلا کےغلط  لَے  کہ  میں پتا نکلا 

جیےجو ہم لگے ستم ، عذاب ایسا 
 ڈھونڈ تا تھا ایک پل  میں  دل یہ جیسے سو دفع
نہ راستہ نہ کچھ پتا میں اس کو  ڈھونڈوں کہاں

میں ڈھونڈنے جو کبھی  جینے کی وجہ نکلا
پتا چلا کےغلط  لَے  کہ  میں پتا نکلا 

Wednesday, April 16, 2014

لڑکیوں کی زندگی اور گھر

لڑکیوں کی زندگی کا فلسفہ بھی عجیب ہے بلکہ بڑا ہی غریب ہے۔پہلے ماں باپ کا گھر،پھر میاں کا گھر اور آخر میں بچوں کا گھر ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
 ان کا اپنا گھر کونسا ہوتا ہے؟کہنے کو تو کہتے ہیں کہ تینوں گھر ان کے ہی ہیں ۔ مگر حقیقت میں ایسا نہیں ہوتا کیونکہ اگر ایسا ہوتا تو یہ سننے میں بھی نہ آتا کہ خاوند نے بیوی کو گھر سے نکال دیا،بچوں نے ماں کو گھر سے نکال دیا اور ماں باپ کے گھر کی کیا کہیں ۔۔۔ وہ اگر نہ نکالتے تو باقی گھروں سے کیوں نکلتی لیکن شاید یہ ہے زندگی یا پھر ہمارے جد امجد کی سنت،جنہیں جنت سے نکالا گیا تھا۔

Monday, April 14, 2014

SQL SERVER – Search Stored Procedure

If  you have the numbers of Stored Procedures in your database, it will be difficult to find a Stored Procedure you want to see / modify / changes in that, so for this issue you can search your Stored Procedure with below Syntex.

From this you can view Stored Procedure to display by text (code)

Syntax 01
sp_helptext @objname = 'sp_name'

From the below Syntax you can select all SP names and you can also search with Link operator too.

Syntax 02
Syntax
SELECT FROM sys.procedures;

تب خھاک مزہ تھا جینے میں

جب درد نہیں تھا سینے میں
تب خھاک مزہ تھا جینے میں


نہ ھنسنا میرے غم پہ انصاف کرنا جو میں رو پڑوں تو مجھے معاف کرنا
جب درد نہیں تھا سینے میں تب خھاک مزہ تھا جینے میں
اب کے شاید ہم بھی روئے ساون کے مہینے میں
یاروں کا غم کیا ہوتا ہیں معلوم نہ تھا انجانوں کو
ساحل پہ کھڑے ہو کر ہم نے دیکھا اکژ طوفانوں کو
اب کے شاید ہم بے ڈوبے موجوں کے سفینے میں
جب درد نہیں تھا سینے میں

Thursday, April 10, 2014

ﻭﻗﺖ ﮐﯿﺴﮯ ﮔﺰﺭﺗﺎ ﮨﮯ

ﻭﻗﺖ ﮐﯿﺴﮯ ﮔﺰﺭﺗﺎ ﮨﮯ __ ﺁﮨﭧ ﺑﮭﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﯽ - ﺁﭖ ﻭﮨﯿﮟ ﮐﮭﮍﮮ ﺭﮨﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﻭﮦ ﮔﺰﺭ ﺟﺎﺗﺎ ﮬﮯ
ﯾﺎ ﺷﺎﯾﺪ ﺁﭖ ﮔﺰﺭ ﺟﺎﺗﮯ ﮬﻮ ... ﺍﻭﺭ ﻭﮦ ﮐﮭﮍﺍ ﺭﮨﺘﺎﮬﮯ

Wednesday, April 09, 2014

سمندر

سمندر میں یہ ہی خاص بات ہے . کے یہ کچھ بھی جھوٹ نہیں - جو نظر آ رہا ہے وہ  ہی ہے ، صاف چمکدار
ہم اپنی زندگی میں اتنا مصروف ہوتے ہیں کے اسے ہی سچ سمھجہ لیتے ہیں -  لیکن  جھوٹ ہوتا ہے سب -
ایک وقت ایسا ضرور آتا ہے کے  اس پاس کچھ نظر نہیں آتا ، سب کچھ دھندلہ اور آنکھوں سے اوجھل ہوتا لگتا ہے - اور زندگی میں کوئی امید باقی نہیں رہتی - اس وقت ہی سمھج آتا ہے کے ہم نے کیا کچھ کھو دیا - احساس ہوتا ہے ، کیا کچھ تھا جو رہ گیا ہے - لیکن تب تک بہت دیرہو  چوکی ہوتی ہے

پھر ایک نیا سورج نکلتا ہے -  جس میں نیی امیدیں ہوتی ہیں ،
اور پھر ان امیدوں کو ہم اپنی زندگی بنا لیتے ہیں - جینا مجبوری بن جاتا ہے -  

Tuesday, April 08, 2014

ہر شخص کی یہی مجبوری ہے

ہر شخص کی یہی مجبوری ہے کہ وہ ساری عمر ایک ہی سزا نہیں بھگت سکتا، 
 یا ایک ہی خوشی کے سہارے زندہ نہیں رہ سکتا۔
 پھانسی کے تختے سے اتر کر بجلی کی کرسی پر بیٹھنا، بجلی کی کرسی سے اٹھ کر صلیب پر چڑھنا، تہہ آب ہونا اور نہ مرنا۔ پانی کی گہرائیوں سے نکل کر سرِ کوہسارے سے چھلانگ لگانا۔ ۔ ۔ ہم سب ایک کرب سے نکل کر دوسری تکلیف کے حوالے ہونا چاہتے ہیں، ایک خوشی سے منہ موڑ کر دوسری خوشی میں ڈوبنا چاہتے ہیں۔ یہ انسان کےلیے اتنا ہی نیچرل ہے جیسے وہ ایک ٹانگ پر ہمیشہ کے لیے کھڑا نہ رہ سکے۔ ۔ ۔

بارش کا پانی

لوگوں کے لئے وہ باہر بہتی بارش کا پانی تھا جس نے میرے گال بھگو دیئے تھے ـ اچھا ہی ہے کہ قدرت نے بارش کے پانی یا آنسوؤں میں سے کسی ایک کا رنگ جدا تخلیق نہیں کیا تھا ورنہ شاید میرے لئے جواب دینا مشکل ہو جاتاـ کاش سبھی رونے والوں کے سروں پر کوئی بادل آ کر برس جایا کرتا تو ہم میں سے بہتوں کا بھرم باقی رہ جاتاـ

محبت لین دین نہیں صرف دین ہے


میری دانست میں محبت کوئی شرط نہیں ہوتی، محبت صرف کی جاتی ہے، چاہے دوسرا کرے نہ کرے- محبت ایک ہاتھ کی تالی ہے اس میں نہ شکوے کی گنجائش ہے نہ شکایت کی- نہ وفا کی شرط ہے نہ بے وفائی کا گلہ-
محبت لین دین نہیں صرف دین ہے---

Monday, April 07, 2014

کسی کے ہونے یا نہ ہونے سے کوئی فرق نہیں پڑتا -

کسی کے ہونے یا نہ ہونے سے کوئی فرق نہیں پڑتا -
انسان کو اکیلے رہنے کی عادت ڈالنی چاہے -
میل میلاب ، رشتے ، ناتے ، دوستی یہ سب بہت تکلف دیتے ہیں -

محبت کبھی تکلف نہیں دیتی ، دیتی ہیں تو یہ صرف انسان کی -- Expectations 
تکلف دیتی ہیں -
ہم نہ جانے کیون لوگوں کو ایسا ہی سمھجہ  لیتے ہیں ، جیسا ہم انہیں دکھنا چاہتے ہیں -
اور شید یا ہی سب سے زدہ خطرناک ہے -

 

Sunday, April 06, 2014

پھر بنیں گے آشنا کتنی مداراتوں کے بعد


پھر بنیں گے آشنا کتنی مداراتوں کے بعد
کب نظر میں آئے گی بے داغ سبزے کی بہار
خون کے دھبُے دھلیں گے کتنی برساتوں کے بعد
تھے بہت بے درد لمحے ختمِ دردِ عشق کے
تھیں بہت بے مہر صبحیں مہرباں راتوں کے بعد
دل تو چاہا پر شکستِ دل نے مہلت ہی نہ دی
کچھ گلے شکوے بھی کر لیتے مناجاتوں کے بعد
ان سے جو کہنے گئے تھے فیض جاں صدقہ کئے
اَن کہی ہی رہ گئ وہ بات سب باتوں‌ کے بعد


فیض احمد فیض

یہاں ہر موڑ پہ ایسے بہت سے لوگ ملتے ہیں

اسے کہنا یہ دنیا ہے
یہاں ہر موڑ پہ ایسے بہت سے لوگ ملتے ہیں
جو اندر تک اترتے ہیں

ابد تک ساتھ رہنے کی
اکھٹے درد سہنے کی
ہمیشہ بات کرتے ہیں

اسے کہنا یہ دنیا ہے
یہاں ہر شخص مطلب کی
حدوں تک ساتھ چلتا ہے
جونہی موسم بدلتا ہے
محبت کے سبھی دعوے
سبھی قسمیں
سبھی وعدے
سبھی رسمیں
اچانک ٹوٹ جاتے ہیں

اسے کہنا
یہ دنیا ہے

Saturday, April 05, 2014